میری ماں کی زندگی،(بچپن)- قسط نمبر 1

سنا تھا کہ زندگی بھت کٹھن ہوتی ہے-قدم قدم پہ آزمائشیں آپ کے سامنے ہوتی ہیں اور اگر بات ایک لڑکی کی زندگی کی ہو تو یہ آزمائشیں اس سے قربانیوں کا مطالبہ کرتی ہیں- کبھی باپ اور بھائی کے مان کیلئے قربانی تو کبھی اپنی ازدواجی زندگی پرسکون بنانے کیلئے،اور یہ قربانیاں دیتے ہوئے کہیں نہ کہیں اس صلے کی امید ہوتی ہے کہ میری اولاد میری زندگی کو جنت بنا دے گی۔۔۔

آج جبکہ میں اپنی زندگی کی 52 بہاریں گزار چکی ہوں تو لگتا ہے کہ آزمائشوں اور قربانیوں کا سلسلہ ابھی جاری ہے- زندگی کی کتاب کی الٹ پلٹ میں جہاں بچپن یاد آتا ہے وہاں لگتا ہے کہ زندگی شروع ہوگئی- یہ 1966ء کی بات ہے جب میں نے ایک متوسط طبقے میں آنکھ کھولی-میں چھ بھن بھائیوں میں سب سے بڑی تھی- میرے ابوجان محکمہ ٹیلی گراف میں گورنمنٹ ملازم تھے اور الیکٹرونکس کا کام بھی جانتے تھے۔دن کو گورنمنٹ جاب کرتے تھے اور رات کو الیکٹرونکس کی دکان پر جاتے تھے-باپ ایک ایسا سایہ ہے جس کے نیچے بیٹیاں راج کرتی ہیں- ابو جان بھت محنتی تھے اور امی جان بہت سلیقہ مند ، سمجھدار خاتون تھیں- وہ بہت احسن طریقے سے گھر چلاتی تھیں-سلائی، کڑھائی میں بہت زیادہ ماہر تھیں-محلے کی اکثرعورتیں ان سے کڑھائی سیکھنے کیلئے آتی تھیں- ابو کا معمول مہینے کی پہلی تاریخ کو ساری تنخواہ امی کے ہاتھ میں تھما کے اپنے فرائض سے سبکدوش ہو جاتے اور گھر کے چولہے،ہماری تعلیم، کپڑے، اور بیمار ہو جانے کی صورت میں دوا دارو کی ساری زمہ داری امی کے کندھوں پہ آ جاتی۔

میری امی جان بہت ہی خوبصورت عورت تھیں- سب پڑوسنیں امی کی بہت تعریف کرتی تھیں-امی جان گھر کو بہت سلیقے سے چلاتی تھیں- کبھی کسی چیز کیلئے پریشان نہیں ہونے دیتی تھیں-

میرے ابو جان ہم سب سے بہت پیار کرتے تھے- ان سے ہمارا رشتہ ایسا تھا جیسے بڑے بھائی کا ہو- ہم اپنے ابو جان سے بہت گپ شپ کرتے تھے- کبھی کبھی امی جان کہتی بھی تھیں کہ صاحب یہ بیٹیاں ہیں ان کو زہادہ سر نہ چڑھاؤ مگر ابو جان ہنس کر ٹال دیتے تھے-

جب میں نویں کلاس میں پہنچی تو میرے خالو نے امی کو کہا کہ بہن یہ بیٹی ہماری ہے اور ہم ہی اس کا رشتہ کریں گے تو امی نے کہا کہ ٹھیک ہے بھائی!ایسے ہی بات آئی گئی ہو گئی مگر ایک دن خالو سچ میں میرا رشتہ لے کر آگئے-

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.